’’یہ مُلک تمہارے باپ کی جاگیر نہیں اور نہ ہی تم لوگ اسکی مالک ہو، تیل چھڑکنے سے اگر۔۔۔ ‘‘ عظمیٰ خان اور ہما خان کی حمایت میں بڑی آواز بُلند ، معاملہ وزیر اعظم تک جا پہنچا

اسلام آباد( نیوز ڈیسک) سینئر اینکر پرسن جیسمین منظور کا کہنا ہے کہ کس طرح سے یہ خواتین اپنی طاقت کے زور پر اور اپنے پیسے کی خماری میں مگن ہو کر دونوں بچیوں کے گھر میں داخل ہوئی اور کس طرح جاہلوں کی طرح توڑ پھوڑ کی، مجھے یہ سب دیکھ کر انتہائی افسوس ہوا

ہے۔سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر معروف ٹی وی اینکر جاسمین منظور کی جانب سے ایک ویڈیو اپلوڈ کی گئی جس میں جیسمین منظور نے ملک ریاض کی بیٹی کے عظمی خان اور ان کی بہن پر تشدد کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ جس طرح سے ملک ریاض کی بیٹی نے عظمی خان اور انکی بہن پر تشدد کیا وہ قابل مذمت ہے، انہوں نے کہا کہ کس طرح سے یہ خواتین اپنی طاقت کے زور پر اور اپنے پیسے کی خماری میں مگن ہو کر دونوں بچیوں کے گھر میں داخل ہوئی اور کس طرح جاہلوں کی طرح توڑ پھوڑ کی، مجھے یہ سب دیکھ کر انتہائی افسوس ہوا ہے۔جیسمین منظور کا اپنے ویڈیو پیغام میں کہنا تھا کہ جاہلوں کی طرح بچیوں کے گھر میں گھسنے والی خواتین کو شرم آنی چاہیے پاکستان کسی کے باپ کی جاگیر نہیں ہے، کوئی آواز نہیں اٹھا رہا کوئی بول نہیں رہا آخر وجہ کیا ہے؟ان لڑکیوں کو فوری طور پر انصاف فراہم کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ آپ لوگوں کے جو بھی گھر کے معاملات ہیں، آپ کے بیٹوں اور دامادوں کے جو بھی معاملات ہیں وہ ایک الگ معاملہ ہے، لیکن یہ کوئی طریقہ نہیں ہے کہ آپ اس طرح سے توڑ پھوڑ کرتے ہوئے کسی کے گھر میں داخل ہو جائیں پر سب سے زیادہ خطرناک چیز ان پر پٹرول چھڑکنا ہے، ان سب حرکات پر آپ کے خلاف سخت سے سخت قانونی کارروائی ہونی چاہیے، اور آپ پر سخت سے سخت کریمینل چارجز لگنے چاہئیں۔

جیسمین منظور نے اپنے ویڈیو پیغام میں ملک ریاض اور ان کی بیٹی کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ پورے پاکستان کے مالک نہیں ہیں کہ اپنے گارڈ کے ساتھ کسی کے بھی گھر میں گھس کر ان پر تشدد کرنا شروع کر دیں، جس طرح سے آپ لوگوں نے انسانی حقوق کی دھجیاں بکھیری ہیں اس پر آپ لوگوں کے خلاف سخت سے سخت قانونی کارروائی ہونی چاہیے۔انہوں نے ٹوئٹر پر جاری اپنے پیغام میں وزیراعظم پاکستان عمران خان ، انسانی حقوق کی وزیر اور قانون نافذ کرنے والے اداروں سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ اگر آپ لوگوں میں تھوڑی سی بھی ہمت ہے تو ان لوگوں کے خلاف ساتھ قانونی کارروائی کی جائے، اوران تشدد کرنے والی خواتین کی گرفتاری کے لئے جلد سے جلد ایک ٹیم بنائی جائے،کیونکہ یہ کل کو کسی کے بھی گھر میں گھس سکتی ہیں۔اپنے ویڈیو پیغام کے آخر میں جیسمین منظور نے کہا کہ مجھے یہ معذرت سے کہنا پڑ رہا ہے کہ اگر خدانخواستہ پیٹرول چھڑکنے کی وجہ سے ان بچیوں کو آگ لگ جاتی یا کوئی اور نقصان ہو جاتا تو آپ نے کس کو جواب دینا تھا، اس کے علاوہ جس طرح کی آپ زبان استعمال کر رہی تھیں مجھے اچھی طرح سے اندازہ ہو گیا ہے کہ آپ کی تعلیم کیا ہے اور کس طرح سے آپ کی تربیت کی گئی ہے؟ خیال رہے کہ گزشتہ کچھ روز سے سوشل میڈیا پر پاکستانی اداکارہ عظمیٰ خان اور انکی بہن ماڈل ہما خان کا تنازعہ چل رہا ہے جس کے بعد پاکستان کا ایک بڑا طبقہہ ملک ریاض اور انکی فیملی پر تنقید کر رہا ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.