پاکستان، بھارت سے زیادہ بڑی جوہری قوت بن گیا۔۔!!! مودی کو کپکی لگا دینےو الی خبر

نیو یارک (ویب ڈیسک) پاکستان جوہری ہتھیاروں والے ممالک میں بھارت سے ایک نمبر اوپر 160 ایٹمی وار ہیڈز کے ساتھ چھٹے نمبر پر ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق اسٹاک ہوم انٹرنیشنل پیس ریسرچ انسٹی ٹیوٹ (ایس آئی پی آر آئی) کی ایٹمی وار ہیڈزکی جانب سے جاری کی گئی سالانہ رپورٹ میں

کہا گیا ہے کہ بھارت کے جوہری پڑوسی ممالک چین اور پاکستان کے پاس اس سے زیادہ وار ہیڈ موجود ہیں۔اگرچہ ایس آئی پی آر آئی سال 2020 میں جوہری وار ہیڈز کی اصل ایجاد کے بارے میں شفافیت کی کمی کی نشاندہی کی گئی ہے ، لیکن اس کا خیال ہے کہ بھارت نے 2019 میں اپنے جوہری ہتھیاروں کی گنتی کو 130 تا140 سے بڑھا کر 150 وارہیڈز تک کر دیا ہے۔ لیکن اس کے پڑوس میں جوہری وارہیڈز کی تعداد زیا دہ ہے ۔رپورٹ کے مطابق پاکستان جوہری ہتھیاروں والے ممالک میں بھارت سے بالکل اوپر 160 ایٹمی وار ہیڈز کے ساتھ چھٹے نمبر پر ہے۔رپورٹ کے مطابق ، پاکستان کے جوہری ہتھیاروں کے پروگرام میں ایک اہم پیشرفت ہوئی ہے۔ رپورٹ کے مطابق “پاکستان نے بنیادی طور پر ایچ ای یو تیار کیا ہے لیکن پلوٹونیم تیار کرنے کی اپنی صلاحیت میں اضافہ کررہا ہے۔” رپورٹ کے مطابق چین ، فرانس ، روس ، برطانیہ اور امریکہ نے اپنے جوہری ہتھیاروں میں استعمال کے لئے ایچ ای یو اور پلوٹونیم دونوں تیار کیے ہیں۔بھارت اور اسرائیل واحد ممالک ہیں جنہوں نے اپنے جوہری وار ہیڈز کے لئے بنیادی طور پر پلوٹونیم تیار کیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق چین کی ایٹمی وار ہیڈ کی تعداد 320 ہے – یعنی بھارت کی تعداد دوگنی سے بھی زیادہ ہے۔ رپورٹ کے مطابق چین اس کے اسلحہ خانے کی نمایاں جدید کاری اور توسیع کے وسط میں ہے۔چین اور پاکستان کے ماضی میں بھی بھارت کے مقابلے میں زیادہ جوہری سر گرمیاں رہی ہیں۔رپورٹ کے مطابق اچھی خبر یہ ہے کہ جنوبی ایشیائ میں جوہری وار ہیڈس کی کوئی فعال تعیناتی نہیں ہے۔ صرف چار ممالک – امریکہ ، برطانیہ ، روس اور فرانس نے جوہری وار ہیڈز تعینات کیے ہیں۔ لہذا ، ہندوستان کی سرحدیں متعین جوہری ہتھیاروں سے پاک ہیں۔ رپورٹ کے مطابق بھارت اپنی جوہری سہ رخی تعمیر کرنے کے لئے آہستہ آہستہ آگے بڑھا ہے۔ زمینی اور ہوا کے “ویکٹر” تیار کرنے کے بعد (ایٹمی وار ہیڈز کے کیریئر۔آرمی اور میرج -2000 اور ایئر فورس کے جیگوار جنگجوؤں کے لئے میزائلوں کی اگنی سیریز) ، بحری ایٹمی صلاحیت کو بڑھاوا دے رہا ہے۔ رپورٹ کے مطابق بھارت پہلی بار فوج پر تیسرا سب سے بڑا خرچ کرنے والا ملک بن گیا ہے اور وہ دنیا میں اسلحہ کا دوسرا سب سے بڑا درآمد کنندہ ہے۔ لیکن یہ اب بھی چین کے فوجی اخراجات کے ایک چوتھائی حصے پر تھوڑا سا خرچ کرتا ہے ۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *