ٹِڈی دَل کو پاکستان پر مہنگا پڑ گیا۔۔!! حکومت نے ٹڈیوں کو ذریعہ آمدن بنانے کا فیصلہ کر لیا، جانتے ہیں ان سے حاصل ہونے والی رقم کا کیا کِیا جائے گا

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)حکومت نے ٹڈی دل کو ذریعہ آمدن بنانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق نیشنل فوڈ سیکیورٹی اینڈ ریسرچ کے تحت شروع ہونے والے اس پروگرام کے ذریعے ٹڈی دل سے متاثرہ کسانوں کی مالی مدد ہوگئی، جبکہ ان ٹڈیو ں اور جانوروں کے فضلے کو مکس کرکےکھاد بھی تیار کی جائے گی۔

اس حوالے سے میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ اس سے ایسی کھاد تیار کی جائے گی جس میں ں 9 فیصد نائٹروجن اور 7 فیصدفاسفورس موجود ہوگا جو کہ زراعت کے لئے بہت مفید ہیں۔ابتدائی طور پر تھل اور چولستان میں اس پروگرام کا افتتاح کیا جائے گا اور اس مقصد کے لئے حکومت کسانوں کو ٹریننگ بھی دی گئی اور کولیکشن سنٹر بھی بنا دیئے جائیں گے جہاں کسان آ کر ٹڈی دل جمع کروا سکیں گے۔حکومتی اعلانیے کےمطابق اس سے کسانوں کی پیداوار میں 15 فیصد اضافہ ہو گا جبکہ دوسری کھادوں کے استعمال میں 25 فیصد کمی آئے گی۔ مزید بتایا گیا ہے کہ 1لاکھ ٹن ٹڈیوں سے 70 ہزار ٹن کھاد تیار کی جاسکتی ہے، ایک اندازے کے مطابق ٹڈیوں سے 1 بلین کی کھاد تیار کی جاسکتی ہے، اور اس پروگرام کے تحت ایک خاندان کو ماہانہ 6 ہزار روپے کی آمدن ہوگی۔خیال رہے کہ پاکستان میں اس وقت ٹڈیوں کا حملہ جاری ہے جس سے فصلوں کے بڑے پیمارے پر ت-باہ ہونے کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔ اس کے علاوہ گزشتہ روز تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی ریاض فتیانہ نے کہا ہے کہ ٹڈیوں کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ اس کوکھانے سے کورونا ختم ہوسکتا ہے، ان کا کہنا تھا کہ حکومت ٹڈیوں کے حوالے سے تحقیق کرا لے،اگریہ حقیقت ہے کہ ٹڈیوں کے کھانے سے مضبوط قوت مدافعت پیدا ہوتی ہے تو قوم ٹڈیوں کا خود ہی تیا پانچا کردے گی۔ اب حکومت نے اس کو ذذرعیہہ معاش بنانے کا فیصلہ بھی کر لیا ہے

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *