جنونی شخص کو ’شہید ‘ قرار نہیں دیا جاسکتا! اُ سینئر صحافی ہارون الرشید کا تہلکہ خیز انکشاف، نیا پنڈارا باکس کھول دیا

لاہور(نیوز ڈیسک) سینئر صحافی ہارون رشید کا کہنا ہے کہ بانی القاعدہ سوڈان گیا تو تو سوڈان کی تباہی کا باعث بن گیا۔سوڈان کی غلطی تھی وہ اس کے متحمل نہیں تھے کہ امریکی میزائلوں کا مقابلہ کر سکتے۔افغانستان گیا تو نائن الیون کا منصوبہ بنایا۔جس کے بعد افغانستان میں ایک لاکھ افراد شہید ہوئے۔ ہارون رشید نے مزید کہا

 

کہ جب بانین القاعدہ پاکستان آئے تو ان کے کمپیوٹر سے پاک فوج سے متعلق جو خفیہ دستاویزات ملی اس سے متعلق مجھ سے جو ثبوت مانگے جائیں میں پیش کر سکتا ہوں۔پاکستان میں بانی القاعدہ کے جو کاغذات نکلے اس میں وہ کہتا تھا کہ پاکستانی فوج پر حملہ کرو۔خیبر پختونخوا اور قبائلی پٹی اور بلوچستان میں خاص طور پر حملہ کرو۔ بانی القاعدہ تحریک طالبان پاکستان کی مدد کرتا رہا۔ہزاروں آدمی مارے گئے اس کے بعد شہید کیسے کہا جاسکتا ہے؟۔وہ ایک جنونی آدمی تھا۔بے شک بانی القاعدہ امریکہ کے خلاف لڑا لیکن پاکستان کے خلاف لڑنے کا کیا جواز تھا۔وہ افغانستان میں رہتا اور وہی لڑتا ،بیوی بچوں کو چھپا لیتا۔ملا عمر بھی اتنا عرصہ چھپا رہاہ

 

ہارون الرشید نےگزشتہ روز پیٹرول کی قیمت میں ایک دم اضافے کے بعد حکومت پر تنقید کرتے ہوئے تجزیہ نگار ہارون الرشید کا کہنا تھا پاکستان میں موجود ہر بحران کے ذمہ دار عمران خان ہیں۔انہوں نے عوام سے کیا گیا ایک بھی دعویٰ پورا نہیں کیا۔ تجزیہ نگار کا کہنا تھا کہ عمران خان نے اپنی کابینہ میں کوئی لائق آدمی نہیں رکھا، مجھے ایک لائق آدمی بتا دیں۔ مزید بات کرتے ہوئے تجزیہ نگار کا کہنا تھا کہ دعویٰ کبھی پورا نہیں ہوتا، عمران خان نے بھی حکومت میں آںے سے قبل بہت سے دعوے کئے تھے، لیکن ایک بھی پوا نہیں کیا۔ عمران خان کو چاہیئے تھا کہ وہ اس مافیہ کو اپنے پاس بلاتا اور انہیں کہتا کہ آپ نے بہت منافع کما لیا ہے، اب کچھ دیر صبر کر لیں، حکومت کوئی درمیان والا راستہ نکال رہی ہے، لیکن عمران خان نے پریشر میں آ کر 7 روپے کم کر کے ایک دم 25 روپے پیٹرول کی قیمت میں اضافہ کر دیا ہے۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *