سرکاری خزانے سے ایک روپیہ خرچ کیے بغیر پنجاب کے سرکاری اسکولوں کے لیے زبردست اقدام

لاہور (ویب ڈیسک) پنجاب حکومت نے قابل تحسین علم دوست اقدام کرتے ہوئے سرکاری خزانے سے ایک روپیہ خرچ کیے بغیر 12 سے زائد سرکاری اسکولوں کی اپ گریڈیشن کردی، دستیاب وسائل کو بروئے کار لانے سے 16 ارب روپے بچائے گئے۔ تفصیلات کے مطابق سرکاری خزانے سے ایک روپیہ خرچ کیے

بغیر پنجاب کے 12 سو 27 سرکاری اسکولوں کی اپ گریڈیشن کردی گئی، محکمہ تعلیم پنجاب نے اسکولوں کی اپ گریڈیشن کا نوٹی فکیشن جاری کردیا۔ بعد ازاں وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی زیر صدارت اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا جس میں وزیر تعلیم و دیگر حکام نے شرکت کی، اجلاس میں وزیر اعلیٰ عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ ایلی منٹری اسکولز کے اضافی 3 ہزار 315 اساتذہ اپ گریڈڈ اسکولوں میں خدمات انجام دیں گے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ایلی منٹری اسکولز کے اضافی 3 ہزار 933 کلاس رومز میں سکینڈری کلاس روم بنیں گے، اضافی ٹیچنگ اسٹاف اسی سکول میں خدمات سر انجام دیں گے، اضافی کلاس رومز کو سکینڈری ایجوکیشن کے لیے استعمال کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ دستیاب وسائل کو بروئے کار لانے سے 16 ارب روپے بچائے گئے، فیصلے سے 1 لاکھ سے زائد طلبہ و طالبات مستفید ہوں گے، 6 ٹیچر اور 9 کلاس روم والے ایلی منٹری اسکولز کو اپ گریڈ کیا جائے گا۔ وزیر اعلیٰ کا کہنا تھا کہ دوسرے مرحلے میں سیکنڈری اسکولز کو ہائر سکینڈری پر اپ گریڈ کیا جائے گا۔ صوبائی وزیر تعلیم مراد راس کا کہنا ہے کہ اسکول کھولنے کے لیے ایس او پیز تیار کیے جا رہے ہیں، اسکولز کھلے تو طلبہ کو ماسک دیے جائیں گے۔ اسکولوں میں سینی ٹائزر اور ہاتھ دھونے کے لیے انتظامات کیے جائیں گے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.