خواجہ معین الدین چشتی اجمیری کے متعلق گستاخانہ کلمات کہنے والا بھارتی اینکر معافیاں مانگنے لگا، بھارےی اینکر کس خوف سے معافی مانگ رہا ہے؟

ممبئی ( ویب ڈیسک) خواجہ معین الدین چشتی اجمیری سے متعلق گستاخانہ کلمات کہنے پر بھارتی اینکر کو قانونی کاروائی اور تنقید کا سامنا، بھارتی اینکر نے لائیو شو میں معافی مانگ لی۔ تفصیلات کلے مطابق بھارتی اینکر امیش دیوگن کو خواجہ معین الدین چشتی اجمیری سے متعلق نازیبا کلمات پر شدید تنقید کا

سامنا ہے، مسلمان تنظیموں نے جہاں انکے خلاف قانونی کاروائی کا اعلان کیا ہے، وہیں بھارتی ہندو اور دوسرے مذاہب کے لوگ بھی ان پر تنقید کررہے ہیں جس کی وجہ یہ ہے کہ خواجہ معین الدین چشتی اجمیری سے صرف مسلمان بلکہ ہندوؤں کی ایک بڑی تعداد ان سے عقیدت رکھتی ہے اور انکے مزار پر جاکر منتیں مرادیں مانگتی ہے۔قانونی کاروائی کےڈ ر سے اور تنقید پر بھارتی اینکر نے لائیو شو میں معافی مانگ لی۔ بھارتی اینکر کا کہنا تھا کہ میں کہنا کچھ چاہتا تھا لیکن کنفیوژن کی وجہ سے غلطی سے میرے منہ سے کچھ اور نکل گیا ، میری ایسی کوئی منشاء نہیں تھی۔امیش دیوگن کا مزید کہنا تھا کہ میں خود بھی بندہ نواز خواجہ معین الدین چشتی اجمیری کے مزار اجمیر شریف میں خود بھی جاتا ہوں اور زیارت کرتا ہوں، میں نے گزشتہ روز ٹویٹ کرکے معافی مانگ لی تھی پھر بھی کسی کو میرے بیان سے ٹھیس پہنچی ہے تو میں ایک بار پھر معافی مانگتا ہوں۔امیش دیوگن کی معافی پر بھارتی صحافی اور وی لاگر کونال کامرا نے ایک ویڈیو کے ذریعے خوب طنز کے تیر چلائے اور ویڈیو کے ذریعے بتایا کہ امیش دیوگن صرف قانونی کاروائی اور مقدمات کے ڈر سے معافی مانگ رہا ہے۔

واضح رہے کہ بھارتی اینکر نے کچھ دن پہلے ایک گرما گرم بحث میں خواجہ معین الدین چشتی کو “لٹیرا” کہہ دیا تھا جس پر بھارتی مسلمانوں میں غم وغصے کی لہر دوڑگئی تھی۔ جس پر انہیں معافی مانگنا پڑی ہے،۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *