Breaking News
Home / آرٹیکلز / اپنی امی کو میرا سلام کہنا ‎‎

اپنی امی کو میرا سلام کہنا ‎‎

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) ایک بہت ہی خوبصورت مسلمان خاتون تھی۔ یہ خاتون اپنے بیٹے کو اپنے گھر کے پاس کے مدرسے میں اردو سیکھنے کے لئے بھرتی کروا آئی ۔۔۔اردو پڑھانے والامیاں جی اس عورت کی خوبصورتی کے بارے میں جانتا تھا۔ چھٹی کے وقت میاں جی نے اس کے بیٹے سے کہا۔

اپنی امی کو میرا سلام کہنا ۔۔۔۔ بیٹے نے آکر ماں کو کہہ دیا کہ میاں صاحب نے آپ کو سلام بھیجا ہے۔ خاتون نے بھی بیٹے کے ہاتھوں سلام کا جواب سلام بھیج کر دے دیا۔یہ سلسلہ ہفتے بھر چلا ۔۔۔ خاتون نے “شوہر” سے مشورہ کیا اور اگلے دن بیٹے سے میاں جی کو کہلوایا کہ امی نے “شام کو گھر پر بلایا ہے” ۔۔۔ یہ سے کر میاں جی خوش ہو گئے۔۔۔ 3 دن سے نہائے نہیں تھے، باسی شیروانی کو استری کروایا، خوشبو لگائی اور پہنچ گیا اس عورت کے گھر ۔۔ خاتون نے پہلے آوبھگت کی، چائے ناشتہ کروایا، پھر، بیٹے کی تعلیم کے بارے میں معلومات لی۔ میاں جی رسمی باتیں کرنے کے بعد، اپنی اصلیت پہ آیا، کہا: ماشاء اللہ، آپ کو خدا نے بڑی فرصت میں تراشا ہے -لیڈی: “وہ تو ہے، شکریہ” میاں جی : محترمہ مجھے آپ سے عشق ہو گیا ہے ۔۔۔ خاتون ؛ جی ہاں وہ تو ہے، پر یہ بات اگر میرے شوہر نے سن لی تو بہت مشکل ہو جائے گا، وہ آتے ہی ہوں گے ۔۔۔ آپ اب جائیے، کل شام کو پھر آئےگا تب بات کریں گے ۔۔۔ میں انتظار کروں گی۔ میاں جی چلنے کو ہوا ہی تھا ۔

کہ باہر سے اس خاتون کے شوہر کی آواز آئی: کون گھر میں گھسا ہے، حرام خور؟ میاں جی گھبرایا ۔۔۔ میں چھپ جاؤں؟ خاتون نے اسے ساڑی پہنا دی، گھونگھٹ کرا دیا اور گندم پیسنے والی پتھر کی چکی کے پاس بیٹھا دیا اور کہا: آپ آہستہ آہستہ گندم پيسے ۔۔۔ میں انہیں چائے وغیرہ پلا کر باہر بھیجتی ہوں، آپ موقع دیکھ کر بھاگ جائیے گا ۔ میاں جی لگے چکی چلانے اور گندم پیسنے ۔۔۔ شوہر داخل ہوئے اور پوچھا کہ یہ کون عورت ہے؟ خاتون، پڑوس میں نئے کرایہ دار آئے ہیں، ان کی بیوی ہے، گندم پیسنے آئی ہیں ۔۔۔۔ شوہر اور بیوی بہت دیر تک ہنسی مذاق اور باتیں کرتے رہے ۔۔۔1 گھنٹے بعد شوہر نے کہا: میں ذرا کونے کی دکان سے پان کھا کر آتا ہوں اور باہر نکل گیا۔ ایک گھنٹے تک گندم پیستے پیستے پسینے میں شرابور میاں جی نے ساڑی اتار کے پھینکی اور آنا فانا میں وہاں سے سرپٹ بھاگ لئے۔ 15 دن بعد عورت کے بیٹے نے مدرسے میں میاں جی سے کہا: “ماں نے آپ کو سلام بھیجا ہے” ۔ میاں جی گرجے- حرام خورو آٹا ختم ہو گیا ہوگا ۔۔۔ کیا 20 کلو آٹا کھا گئے، جو اب دوبارہ سلام بھیجا ہے۔

Share

About admin

Check Also

غربت کا وقت کاٹنا بڑا دشوار ہوتا ہے

سبحان اللہ ۔۔۔۔ یہ بہت پرانے زمانے کی بات ہے۔ ویسے پرانا زمانہ تھا ،بڑی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

shares

Powered by themekiller.com