Breaking News
Home / آرٹیکلز / اسلام کی پہلی اذان کب اور کس نے دی

اسلام کی پہلی اذان کب اور کس نے دی

جب مسجد نبوی کی تعمیر مکمل ہوئی تو تمام صحابہ
حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے گرد حلقہ بنا کر بیٹھ گئے۔ حضرت علی رضی اللہ تعالی عنہ نے فرمایا کہ چھت پر کچھ ایسا انتظام ہونا چاہیے جسجب مسجد نبوی کی تعمیر مکمل ہوئی تو تمام صحابہ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے گرد حلقہ بنا کر بیٹھ گئے۔ حضرت علی رضی اللہ تعالی عنہ نے فرمایا کہ

چھت پر کچھ ایسا انتظام ہونا چاہیے جس سے لوگوں کو نماز کے لئے بلایا جا سکے۔ صحابہ کرام رضی اللہ تعالی عنہ نے یہ بات سن کر اپنی اپنی رائے دینی شروع کر دی۔ ایک صحابی رضی اللہ تعالیٰ عنہٗ نے فرمایا کہ مسجد کے دروازے پر نماز کے وقت جھنڈا لگا دیا جائے اور نماز کے بعد اتار لیا جائے۔ ایک صحابی نے

اپنی رائے دی کہ عسائیوں کی طرح گھنٹی بجائی جائے۔ ایک صحابی نے کہا کہ یہودیوں کی طرح سنگھ بجایا جائے۔ ایک نے کہا مجوسیوں کی طرح آگ روشن کی جائے۔ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم تمام صحابہ کی باتیں سن رہے تھے پھر حضرت عمر رضی اللہ تعالی عنہ نے اپنی رائے دی۔ جب نماز کا وقت ہو تو

ایک شخص نماز کے لئے اعلان کرے۔ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے حضرت عمر فاروق کی اس تجویز کو پسند کیا۔ اور سیدنا بلال رضی اللہ تعالی عنہ کو حکم دیا کہ وہ نماز کے وقت اعلان کریں۔ اسلام کی یہ پہلی اذان تھی جو حضرت بلال رضی اللہ تعالی عنہ نے سن 2ہجری کو دی۔ حضرت بلال رضی اللہ تعالی عنہ اسلام کے پہلے مؤذن تھے

About admin

Check Also

ڈاکٹر عبدالقدیر خان اکثر اپنے کالج کا دورہ کیا کرتے تھے،وہ کبھی بھی موجودہ پرنسپل کے سامنے کی نشست پر نہیں بیٹھتے تھےکیونکہ۔۔۔ قومی ایٹمی سائنسدان کی زندگی کے بارے میں حیران کن انکشاف

پاکستان کے ایٹمی سائنسدان محسن پاکستان ڈاکٹر عبدالقدیر خان نے کراچی کے ڈی جے سائنس …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com