Home / سٹی نیوز / 25 سال سے کسی اور کی قبر کو ماں کی قبر سمجھتے رہے لیکن ایک دن ماں زندہ گھر لوٹ آئی نکلی اور اس کے بعد کیا ہوا دل ہلا دینے والی کہانی ۔۔

25 سال سے کسی اور کی قبر کو ماں کی قبر سمجھتے رہے لیکن ایک دن ماں زندہ گھر لوٹ آئی نکلی اور اس کے بعد کیا ہوا دل ہلا دینے والی کہانی ۔۔

ماں تو گھر کی رونق ہوتی ہے اس کے پاوں کے نیچے جنت ہوتی ہے اور ماں کے بغیر گھر ویران لگتا ہے اور ماں سے گھر میں برکت اور رحمتیں نازل ہوتی ہیں جس گھر میں ماں نہ ہو وہ گھر کسی کھنڈر کی مانند ہوتا ہے سوشل میڈیا پر ایسی کئی ویڈیوز دیکھی ہوں گی جس میں کچھ ایسی معلومات ہوتی ہیں جو کہ دوسروں کو بھی حیرت میں مبتلا کر دیتی ہیں۔

ہماری ویب سائٹ کی اس خبر میں آپ کو ایک ایسی ہی کہانی سے متعلق بتائیں گے۔پنجاب میں ایک گھرانہ ایسا بھی ہے جو اپنے گھر کے اہم فرد جس کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ اگر یہ نہ ہو تو گھر گھر نہیں لگتا ہے، یہ گھرانہ اس فرد یعنی خاتون کو تلاش کرتا رہا۔ لیکن کس دعا کی بنا پر وہ خاتون ملیں یہ بھی کسی بڑے سبق سے کم نہیں ہے۔دراصل لاہور سے تعلق رکھنے والا نوجوان گزشتہ 25 سالوں سے اپنی والدہ کو تلاش کر رہا تھا، حتیٰ کہ انہوں نے والدہ کے انتقال کا بھی سوچنا شروع کر دیا تھا، اور اس حوالے سے وہ گزشتہ کئی سالوں سے کسی اور

خاتون کی قبر کو والدہ کی قبر سمجھ کر فاتحے کے لیے آ تے رہے۔نوجوان کا کہنا تھا کہ میں جب 2 سے 3 ماہ کا تھا تو اس وقت والدہ لاپتہ ہو گئی تھیں، والدہ ذہنی مریضہ ہیں جس کی وجہ سے وہ گھر کا پتہ بھول گئیں اور 25 سال اپنے سے جدا رہیں۔نوجوان کا کہنا تھا کہ میری دادی نے مجھے پالا اور پرورش کی، میں دادا دادی کو ہی والدین سمجھتا تھا، لیکن جب بڑا ہوا تو پتہ چلا کہ میرے ابو اور امی کوئی اور ہیں، یہ تو میرے دادا اور دادی ہیں۔نوجوان بتاتا ہے کہ وہ رشتہ داروں اور پرانے محلے داروں سے والدہ کے حوالے سے معلومات دریافت کرتا تھا کہ کہیں سے کوئی سراغ مل جائے اور وہ والدہ تک پہنچ جائے۔ وہ بتاتے ہیں کہ گھر کے بڑے ہمیشہ کہتے تھے کہ تمہاری والدہ کا انتقال ہو گیا ہے۔ میرا دل نہیں مانتا تھا کہ میری والدہ فوت ہو گئی۔

والدہ سے ملاقات سے متعلق وہ بتاتے ہیں کہ ایک میں جہاں پہلے کرائے پر رہتا تھا وہاں ایک پڑوسی تھے جو کہ بزرگ تھے، وہ ہمیشہ مجھے دعائیں دیتے تھے۔ ایک مرتبہ انہوں نے مجھے بچوں کی دعائیں دیں جس پر میں نے کہا کہ بچے تو میرے ہیں، آپ مجھے مدینہ جانے کی دعا دیں، جس پر انہوں نے مدینہ جانے کی دعا دی۔اور پھر میرے موبائل پر رشتہ دار کی کال آئی کہ والدہ کی کوئی تصویر بھیج دو، چونکہ میرے پاس کوئی تصویر نہیں تھی اس لیے میں نے والد سے رابطہ کیا۔ اتنے میں کزن کی کال آئی کہ امی جی کا پتہ چل گیا ہے، اس وقت اس نوجوان کی کی خوشی کا کوئی ٹھکانہ نہیں تھا۔

اس گھرانے کے لیے حیرت انگیز بات یہ بھی تھی کہ جس قبر کو یہ والدہ کی قبر سمجھتے رہے وہ تو کسی اور ہی خاتون کی قبر کی تھی کیونکہ ان کی والدہ صحیح سلامت تھی اور لاپتہ ہو گئی تھیں، مگر چونکہ رشتہ دار اور آس پاس کے لوگوں نے یہ بات باور کرا دی تھی کہ ماں کا انتقال ہو گیا ہے تو وہ بھی نا چاہتے ہوئے تسلیم کرنے پر مجبور تھے۔

About admin

Check Also

کیا تھے کیا سے کیا ہو گئے – صحت مند اور ہنستا کھیلتا نوجوان ہڈيوں کے ڈھانچے میں تبدیل، معصوم بچی باپ کی بیماری کو دیکھ کر بلک پڑی

ایک پیار کرنے والا دوستوں جیسا جیون ساتھی اور فرشتوں جیسی مسکراہٹ والی اولاد اگر …

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Powered by themekiller.com