Breaking News
Home / کھیل / وقار یونس نے عامر ہی نہیں یوسف ، رزاق اور شعیب اختر کو بھی عبرتناک انجام تک پہنچایا تھا،حقائق پر مبنی رپورٹ

وقار یونس نے عامر ہی نہیں یوسف ، رزاق اور شعیب اختر کو بھی عبرتناک انجام تک پہنچایا تھا،حقائق پر مبنی رپورٹ

عامرکے ریٹائرمنٹ کے اعلان نے پاکستانی شائقین کرکٹ کو پریشان کردیا ہے۔اور تب سے اب تک پہلی بار کرکٹ بورڈ میں سیاست اور سازشوں جیسے عناصر پر کھل کربات ہونے لگ گئی ہے۔ اور کڑی سے کڑی مل جانے سے کچھ ایسی باتیں بے نقاب ہونے لگ گئی ہیں جن پر نہ تو پہلے کبھی اتنا دھیان دیا گیا اور نہ ہی ان پر کبھی اس طرح سے کھل کربات کی گئی۔باوجود اس کے کہ محمد عامر 2010کے سپاٹ فکسنگ سکینڈل

میں نامز دتین کھلاڑیوں میں سے ایک تھے۔ اور یہ بھی کہ پچھلےسال عامر نے ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کااعلان کیاتھا جس سے ٹیسٹ فارمیٹ میں پاکستان کا بولنگ کاشعبہ بے حد کمزور ہوگیا، پاکستانی شائقین کرکٹ نے محمدعامر کے فیصلے کو دھیرے دھیرے قبول کرلیا کیونکہ عامر ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی دونوں میں پوری طرح فوکس کرکے زبردست پرفارمنس کا مظاہرہ کرنے لگ گئے تھے۔ انھوںنے ورلڈ کپ، پی ایس ایل اور سری لنکا کے خلاف سیریز میں زبردست پرفارمنس دکھائی،یہاں تک کہ بنگلہ دیش پریمئیر لیگ اور لنکا کرکٹ لیگ میں بھی عامر ایک سٹار بائولر کے طور پر سامنے آئے۔ یہ بات سب جانتے ہیں کہ پچھلے کچھ عرصے سے بارہا ٹیم مینجمنٹ ان کے ٹیسٹ چھوڑنے کے فیصلے پر تنقید کررہی تھی۔ انھیں ٹیم سے ڈراپ کیا جا رہا تھا یہاں تک کہ سینٹرل کنٹریکٹ سے بھی ان کا نام خارج کردیا گیا۔ اور عامرایسے غصے سے بھرے ہوئے لوگوں کو باربار وضاحتیں دے رہے تھے۔وہ کہتے رہے کہ ان پر ورک لوڈبہت زیادہ تھا۔ وہ چیختے چلاتے رہے کہ وہ ایک شارٹ فارمیٹ پر فوکس رکھناچاہتے ہیں۔انھوںنےیہ بھی کہاکہ اگر وہ ٹیسٹ کرکٹ جاری رکھتے تو شاید ان کا کیرئیر ختم ہوچکاہوتا۔لیکن انھیں ہر بار انھیں حوصلہ شکنی،

ذلت ،رسوائی اور بےعزتی سے ہی جواب دیاگیا اور رفتہ رفتہ ایسا ماحول تیار کیا گیا کہ تنگ آکر عامر نے ریٹائرمنٹ لے لی۔ اگر پی سی بی واقعی ٹی ٹوئنٹی اور ون ڈے کے سب سے بہترین بائولر کو مزید کھلانے میں مخلص ہوتا تویہ تو سوچا ہوتا کہ چلو ٹیسٹ کرکٹ تو ایک طرف چلی گئی کم از کم ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی کابائولر تو بچالیا جائے،درپردہ ہی عامر کو سمجھا بجھا کر معاملہ ختم کیا جا سکتا تھا۔ ۔لیکن وسیم خان نے محمد عامر سے رابطہ کرکے ان سے ان کا فیصلہ پوچھا اور ترجمان کرکٹ بورڈنے میڈیا پر خبرچلواتے ہوئے کہا کہ عامر نےریٹائرمنٹ لےلی ہے ۔یہ ان کا ذاتی فیصلہ ہے۔ہم اس کا احترام کرتے ہیں۔ آئندہ کسی بھی ایونٹ میں ان کا نام زیر غور نہیں ہوگا۔یوں لگا جیسے یہ اعلان نہیں ایک جشن تھا۔یوں لگا جیسے کچھ لوگ یہی سب کچھ کروانےکی کوشش کرتے رہےاور خود عامر کے منہ سے کرکٹ چھوڑنے کا اعلان سننے کے منتظر تھے۔یہ لوگ کون تھے ۔ خود محمدعامر نے ان کا نام بھی لے لیا۔ موجود ہ ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق اور بائولنگ کوچ وقار یونس۔ معاملے کے سیاسی پہلوئوں پر جانے سے پہلے ذرا ان دونوں شخصیات کی ڈیڑھ دو سالہ کارکردگی کا احوال ملاحظہ ہو۔شروعات آسٹریلیاکے خلاف ٹیسٹ سیریز سے ہوئیں ۔

پاکستان سیریز میں وائٹ واش ہوا اور برسبین اور ایڈیلیڈ میں کھیلے گئے دونوں میچوں میں پاکستان کو اننگز کے مارجن سے شکست ہوئی۔جس کے بعد پاکستان ٹی ٹوئنٹی سیریز میں بھی وائٹ واش ہوا۔پاکستانی ٹیم نوجوان اور ناتجربہ کارسری لنکا سے اپنے ہوم گرائونڈ پر ٹی ٹوئنٹی سیریز کلین سویپ ہوئی۔پاکستانی ٹیم انگلینڈ گئی جہا ں اسے ٹیسٹ سیریز میںایک صفر سے شکست کا سامنا ہوا۔جبکہ ٹی ٹوئنٹی سیریز برابری پر ختم ہوئی۔زمبابوے کی ٹیم پاکستان کے دورے پر آئی اور اس نے بھی ایک ون ڈے میچ میں پاکستان

About admin

Check Also

بیٹنگ میں آؤٹ آف فارم لیکن بولنگ ٹاپ کلاس! مین آف دی میچ محمد حفیظ نے اپنے چار اوورز میں کتنے رنز دیے؟ نیا ریکارڈ بنا ڈالا

پاکستان نے دوسرے ٹی ٹوئنٹی میں ویسٹ انڈیز کو شکست دیکر 4 میچوں کی سیریز میں 0-1 …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com