Breaking News
Home / Other / بھارت کا وہ شرمناک گاﺅں ….!! جہاں ایک عورت کے کئی شوہر ہوتے ہیں،حیران کن اعتراف

بھارت کا وہ شرمناک گاﺅں ….!! جہاں ایک عورت کے کئی شوہر ہوتے ہیں،حیران کن اعتراف

شادی ایک مرد اور عورت کے درمیان انتہائی ذاتی نوعیت کے تعلق کا نام ہے لیکن بھارتی ریاست مدھیہ پردیش کے گاﺅں سرائے چولا میں شادی کا مطلب کچھ اور ہی ہے۔ یہاں ایک بھائی شادی کرتا ہے تو باقی بھی اپنی جسمانی ضرورت پوری کرنے کے لئے اسی کی بیوی سے استفادہ کرتے ہیں اور بعض اوقات تو یہ رشتہ دوستوں تک بھی پھیل

جاتا ہے۔ اس گاﺅں میں یہ معاملہ کوئی نئی بات نہیں ہے بلکہ صدیوں سے یہی رواج چل رہا ہے۔ ماہرین سماجیات کا کہنا ہے کہ یہاں کے لوگ تاریخی طور پر لڑکیوں کی بجائے لڑکوں کوفوقیت دیتے رہے ہیں اور صرف ان کی صحت اور زندگی کے لئے تگ و دو کرتے رہے ہیں جس کا نتیجہ یہ ہوا ہے کہ اب یہاں خواتین کی تعداد خطرناک حد تک کم ہوگئی ہے۔ اب یہاں ایک مرد شادی کرتا ہے تو متعدد دیگر مرد بھی اس میں شامل ہوجاتے ہیں کیونکہ سب مردوں کے لئے علیحدہ علیحدہ بیویو ں کا حصول ممکن نہیں رہا۔مزید پڑھئیے ::پھولوں کو تازہ رکھنے کے لئے ان پر پانی چھڑکنے کا طریقہ تو عام استعمال کیا جاتا ہے لیکن ایرانی سائنسدانوں نے ایک تحقیق میں معلوم کیا ہے کہ پھولوں پر پیشاب کے چھڑکاﺅ سے انہیں تازہ رکھنے کا رودانیہ دو گنا کیا جاسکتا ہے۔آزادیونیورسٹی کرج اور یونیورسٹی آف تہران کے سائنسدانوں نے کٹے ہوئے پھولوں پر پیشاب کے اثرات جاننے کے لئے متعدد تجربات کئے۔ ان تجربات سے معلوم ہوا کہ جو پھول صرف پانی میں رکھنے سے تقریباً ایک ہفتہ تازہ رہ سکتے ہیں انہیں پیشاب کے استعمال سے تقریباً دو ہفتے تک تازہ رکھا جاسکتا ہے۔سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ پیشاب میں پایا جانے والا یوریا نائٹروجن فراہم کرتا ہے جو کہ پھولوں کی ڈنڈیوں میں جذب ہوکر انہیں خوراک فراہم کرتی ہے اور یہی وجہ ہے کہ یہ طویل عرصے تک تازہ رہتے ہیں۔

About admin

Check Also

“پہلے بالی ووڈ والوں کو اتنی کنواری ہیروئن چاہیے ہوتی تھی جس نے کبھی بوسہ بھی نہ لیا ہو” ماہیما چوہدری فلم انڈسٹری میں تبدیلی پر بول پڑیں

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) بالی ووڈ کی سابق اداکارہ ماہیما چوہدری کا کہنا ہے کہ اب …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com