Home / اہم خبریں / امریکہ جان گیا تھا کہ روس کو شکست دینے کے بعد جنرل ضیا الحق طاقتوربن کراس کےلئے خطرناک ہوسکتے ہیں پاکستان کی دردناک تاریخ کا ایک اور باب

امریکہ جان گیا تھا کہ روس کو شکست دینے کے بعد جنرل ضیا الحق طاقتوربن کراس کےلئے خطرناک ہوسکتے ہیں پاکستان کی دردناک تاریخ کا ایک اور باب

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سابق آرمی چیف او ر سابق صدر جنرل ضیا الحق پاکستانی تاریخ کے انتہائی چالاک اور ذہین فوجی جرنیل سمجھے جاتے ہیں جنھوںنے افغان جنگ میں روس کے خلاف امریکہ سے دفاعی تعاون کا معاہدہ کرتے ہوئے پاکستانی کےلئے بھاری مالی امداد اور مراعات حاصل کر لی تھیں اسی طرح اس جنگ میں روس جیسی بڑی طاقت کو شکست دینے میں کردار اداکرنے پر خطے میں پاکستان کی اہمیت کو اجاگر کروانے میں

اپنا حصہ ڈالا تھا۔1979میں افغانستان پر سوویت یونین کے یلغار کے بعد یہ جنگ 14برس تک جاری رہی جس میں امریکہ سات سمندر پار بیٹھ کر اپنے اتحادیوں کی مدد سے کامیابیاں حاصل کررہاتھا۔ اس جنگ میں سعودی عرب نے بھی امریکی اتحادی ہونے کا کردارادا کیا ۔ امریکہ جنرل ضیاالحق کی صلاحیتوں سے پوری طرح آگاہ تھا۔80کی دہائی کے اختتام پر اس جنگ کے نتائج ظاہر ہوتے ہی پینٹاگون کو یہ کھٹکا لگ گیاکہ جنرل ضیاالحق کا تدبر اور حکمت عملی مستقبل میں امریکہ کو پاکستان کی کسی اور من مانی پر بھی مجبور کر سکتی ہے۔ صاف لفظوں میںیہ کہ امریکہ کو جنرل ضیا الحق یا پاکستان کااس اہم کامیابی کی بنا پر طاقتور ہونا بھی قابل قبول نہیں تھا۔ چنانچہ امریکہ نے جنرل ضیا الحق کو ٹھکانے لگانے کی ٹھان لی۔ ادھر جنرل ضیا الحق بھی کام نکلوا کر نام و نشاں مٹا دینے کی امریکی خصلت سے پوری طرح آگاہ تھے اس لئے وہ ہر وقت چوکنے رہتے تھے۔اس لئے امریکہ کوجنرل ضیا الحق کو راستے سے ہٹانے کےلئے انتہائی خاص الخاص حکمت عملی پر کام کرناپڑا۔

About admin

Check Also

ایک ایک کر کے سب ساتھ چھوڑنے لگے۔۔۔تحریک انصاف کے ایک اور مضبوط ترین رہنماکا استعفیٰ

حکومت اختلافات کا شکار ہو گئی ، سینئیر وزیر سردار تنویر الیاس کا عہدے سے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com