Breaking News
Home / آرٹیکلز / بیوی کے وہ حقوق جو آپ کو معلو م نہیں شادی شدہ لوگوں کے لیے راز کی باتیں

بیوی کے وہ حقوق جو آپ کو معلو م نہیں شادی شدہ لوگوں کے لیے راز کی باتیں

شو ہر پر بیوی کے حقو ق کچھ یوں ہیں ۔ حق مہر ادا کرے۔ طاقت کے مطابق خرچہ دے۔ مو سم کے مطابق کپڑ ے بنا دیا کرے۔ تیسرے دن حق زوجیت اداکرے۔ ضروریات زندگی کا سامان مہیا کرے۔ بیوی کو گالیاں نہ دے۔ بیوی کو علیحدہ مکان رہنے کے لیے دے۔ اگر ہوسکے تو عورت کے لیے خادمہ کا بندوبست کرے۔ بیوی پر خرچ کرکے احسان نہ جتائے ۔ سفر سے بیوی کے لیے تحفہ لائے۔ عور ت کو بالاوجہ ناراض نہ کرے۔ تر ش روی اور سختی سے پیش نہ آئے۔

عورت سے محبت سے باتیں کرے ۔ اگر طاقت ہوتو عورت کو زیور پہنائے ۔ بیوی کو نماز ،روزہ، حج ،زکوٰۃ ،حیض ونفا س اور دیگر ضروریات دین کے مسائل سکھا دے ۔ عورتوں کے سامنے ان عورتوں کا ذکر نہ کرے ۔جنہیں زیادہ جہیز ملا ہو۔ اگر مرد کی ایک عورت مالدار ہو اور دوسری غریب ہوتو غریب کی بے عزتی نہ کرے۔ بیوی کے رشتہ دار وں سے اسی طرح برتاؤ کرے جیسا کہ اپنے رشتے داروں سے کرتا ہے۔ اگر خود خوشبو وغیرہ کا استعمال کرتا ہو تو اپنی بیوی کےلیے بھی خوشبو کا انتظام کرے۔

بیوی کو رشک نہ دلائے یعنی اس کے سامنے لونڈی کی جانب تسکین جنس کے لیے ہاتھ نہ بڑھائے۔ مرد محبت کے معاملے میں درخت کی طرح ہوتا ہے۔ جہاں ایک دفعہ لگ گیا ، تمام عمر اسی جگہ رہتا ہے۔ شوہر سے بات کرنے کے آداب نیک بیوی کو چاہیے کہ شوہر سے بات کرنے میں چند باتو ں کا خاص خیال رکھے:اس کی بات کو پوری توجہ سے سنے۔ بیچ میں نہ بولے، جب بات پوری ہوجائے اور پھر کوئی بات سمجھ نہ آئی ہوتو پوچھ لے ۔
کیونکہ بیچ میں بولنے سے اکثر بات کا رخ کہیں سے کہیں نکل جاتا ہے۔ اور بات کا مقصد بھی فو ت ہوجاتا ہے۔ کبھی “تو” کا لفظ استعمال نہ کرے بلکہ ہمیشہ آپ کا لفظ استعمال کرے۔ ہمیشہ اپنا لہجہ نرم رکھے ، کبھی بھی تیز لہجے میں بات نہ کرے ، بلکہ غصے کی آمیزش سے دور ہو کر نرمی و شگفتگی کے ساتھ بات کرے۔ کیوں ، کیا ، کیسے ، کب ، کہاں ان الفاظ کو کبھی استعما ل نہ کرے۔
عورت میں انکار کرنے کی جرات ہونی چاہیے ہ ر ایرے غیرے سے بات کرنا ۔ عورت کا معیا ر گرادیتا ہے۔ عورت ایسی ہو کہ کوئی بھی غیر مرد اس سے بات کرنے سے پہلے سو بار سوچے ۔ یہ نہیں کہ کسی بھی غیر مرد سے وہ خود باتیں کریں یہ معیار نہیں ہوتا عورت کا۔ عورت کی حیاء شیشی میں بند ایک خوبصورت خوشبو کی طرح ہوتی ہے۔

اور اگر وہ خوشبو اڑ جائے تو خالی شیشی کو لوگ پھینک دیا کرتے ہیں۔ کوئی بھی مرد کتنا ہی نیک اور آپ کا قریبی کیوں نہ ہو وہ پہلے مرد ہے اس لیے بنت حوا اپنی حدوں میں رہو یہ جو سوشل میڈیا کا دور ہے اس نے تو عورت کو بہت بے حیا ء کر دیا ہے۔ ایک تلخ حقیقت ہے۔ بہت سی عورتیں نیک بنتی ہیں۔ لیکن وہ ہر وقت نامحرم مردوں سے باتوں میں لگی رہتی ہیں۔ ان مردوں میں آپ کے خالہ زاد، ماموں زاد، چچا زاد، آپ کا منگیتر ، آپ کا شاگرد ، آپ کا استاد، آپ کا پڑوسی، آپ کا ڈرائیور، آپ کا چوکیدار سب شامل ہیں۔ کسی سے بھی کام کے علاوہ کوئی بھی بات کرنے کی اجازت نہیں ۔ لہذا اپنا خیا ل کیجیے۔ عزت باربار نہیں ملتی۔ وہی بات عورت کی ہے کہ عورت کی حیاء شیشی میں بند ایک خوبصورت خوشبو کی طرح ہوتی ہے۔ اگر وہ اڑ جائے تو خالی شیشی کو لوگ پھینک دیا کرتے ہیں۔

Share

About admin

Check Also

اگر آج فری اینڈ فیئر الیکشن ہوں تو عمران خان نہیں جیتیں گے کون سی جماعت کلین سویپ کر جائیگی؟نام بتا دیا گیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) ایک نجی ٹی وی کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے ملک کے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com